برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے پہلے مسلم چانسلر ساجد جاوید کی کابینہ سے چھٹی کر دی: پاکستانی کمیونٹی کیا کہتی ہے؟

0
1796

بریگزٹ کیبعد برطانوی وزیر اعظم نے اپنی کابینہ میں اہم تبدیلیاں کی ہیں، پہلے مسلم چانسلر ساجد جاوید کی چھٹی ہو گئی، انکی جگہ انڈین اوریجن کے رشی سناک اب نئے چانسلر ہونگے، یاد رہے ساجد جاوید کی فیملی پاکستان سے برطانیہ منتقل ہوئی، انکی کابینہ سے چھٹی یقینا برطانیہ میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کیلیے ایک بڑا دھچکا ہو گا،

دوسری طرف رشی کیلیے یہ ایک بڑی موو ہے، کیونکہ وہ پہلی دفعہ 2015 میں ایم پی منتخب ہوئے، اور 2018 تک وہ جونیئر منسٹر تھے

ساجد جاوید کا سیاسی کیریئر ہمیشہ بھونچال کا شکار رہا ہے، تھریسامے کی حکومت میں وہ ہوم سیکریٹری جیسی اہم پوسٹ پر فائز تھے، تھریسامے کی چھٹی ہونے کیبعد وہ بورس جانسن حکومت میں سیکریٹری خزانہ بھی رہے، تھریسامے حکومت میں انھیں ‘ونڈرش’ سکینڈل کی وجہ سے عوام سے معافی مانگنی پڑی- اور جب وہ وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون کی حکومت میں بزنس سیکریٹری تھے تو انھیں ‘ریڈکار’ اسکینڈل کا سامنا کرنا پڑا، اور انھیں حکومت نے فوری طور پر آسٹریلیا میں اپنی سالانہ چھٹیاں مختصر کر کے اشو کے فورا حل کیلیے لندن واپس بلایا گیا- کیمرون کے متبادل کے طور پر بھی وہ ریس میں شامل تھے لیکن انھیں اس کیمپیئن سے بھی دستبردار ہونا پڑا

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here