شیخ رشید کو مُنہ پر انڈا مارنے والی خاتون سیاسی ورکر کا کہنا ہے کے زندگی کی خواہش پُوری ہو گئی

0
750

چند دن پہلے شیخ رشید انگلینڈ کے ذاتی دورے پر تھے اور خبروں کی ذینت بنے جب اُنھیں انیل مُسرت نے شاپنگ کروائی اور اُن کی مشہوری تب ہوئی جب وہ ایک فنکشن میں شرکت کیلیے تھری پیس سُوٹ پہن کر خاص تیاری کیساتھ ہوٹل میں آئے، اور اچانک اُنکے چہرے پر انڈوں کی بارش ہو گئی۔ شیخ رشید غصے میں آئے، اور اُنکے ساتھیوں کو بھی سنبھلنے کا موقع نا ملا، شیخ رشید پر انڈے کس نے مارے، ذرائع نے جب تحقیق کی تو پتا چلا کے شیخ رشید پر جس بُہادر خاتُون نے انڈے برسائے اُنکا نام سیم ناز ہیں، جو پاکستانی برٹش ہیں  اور مُتحرک سیاسی ورکر ہیں۔

سیم کا کہنا تھا کہ شیخ رشید کافی عرصہ اپنے سیاسی مُخالفین پر الفاظ کے نشتر چلاتے رہتے ہیں اور بالکُل بھی تمیز اور اخلاقیات کا مُظاہرہ نہیں کرتے، ہم انگلینڈ میں رہتے ہوئے ہمیشہ اُنکے بیانات پر کُڑتے، اور یہ کافی عرصہ پہلے ذہن بنایا کہ جب بھی موقع ملا ان کو سبق ضرُور سکھانا ہے۔ اور موقع کی تلاش میں رہی، اب جب شیخ رشید انگلینڈ آئے تو اُنکا شیڈول حاصل کیا اور پھر مقررہ دن ہوٹل اُنکے پرستار بن کر پہنچ گئے، انڈے اپنی اجرک میں چھُپائے اور جیسے ہی شیخ رشید ہوٹل آئے، مُجھے اُنہوں نے دیکھا اور مثال دی اور ساتھ میں میں نے پروگرام کیمطابق اجرک سے انڈے نکالے اور اُن کے سر پر دے مارے۔

شیخ رشید کو بالکُل بھی توقع نہیں تھی اُنکے ساتھ کیا ہونے جا رہا ہے وہ فورا واپس چلے گئے، اور مُجھے اتنی خُوشی ہوئی جو الفاظ میں بتانا مُمکن نہیں۔ ایک بڑی خواہش پُوری ہو گئی، چونکہ انگلینڈ میں انڈے مارنے پر کوئی سزا نہیں ہے لہذا اسی لیے یہ راستہ چُنا۔ اب اُمید کرتی ہُوں کہ شیخ رشید مُخالف سیاستدانوں پر الفاظ کے چُناؤ میں احتیاط برتیں گے۔

سیم ناز کا مزید کہنا تھا کہ شیخ رشید نے ویڈیو بنانے والے صحافی کو تھپڑ مارنے کی کوشش کی اور غصے میں کہا کہ اس ویڈیو کلپ کو حذف کر دیں۔

صحافی نے ویڈیو ڈیلیٹ کی لیکن ہم کوشش کر رہے ہیں کے یہ ویڈیو ری ٹریو ہو جائے، تاکہ لوگ اس تاریخی واقعہ سے محظُوظ ہو سکیں

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here