مولانا فضل الرحمان نے1997 میں نواز شریف صاحب کو بھی یہودی ایجنٹ اور قادیانی نواز کہا تھا، اب پھرمذہبی نفرت اور انتشار کو ہوا دے رہے ہیں، کیا آپ مولانا کے ساتھ ہیں؟

0
778

مولانا فضل الرحمان صاحب کا کوئٹہ شو زبردست شو تھا ۔ انہوں نے مذہبی موضوع ، اصطلاحات اور جذبات کا خوب استعمال بھی کیا اور استحصال بھی ۔

مولانا فضل الرحمان صاحب پرویز مشرف صاحب کا اقتدار بچانے کے لیے ایل ایف او کر سکتے ہیں ۔ اسمبلیوں سے منتخب کروانے کے لیے ایم ایم اے کو توڑ سکتے ہیں ۔ اس وقت کی سرحد اور بلوچستان اسمبلی کو توڑنے کا وعدہ توڑ سکتے ہیں تاہم عمران خان صاحب کو ایک سال بھی برداشت نہیں کر سکتے ۔ مولانا مذہبی نفرت اور انتشار کو ہوا دے رہے ہیں۔

مولانا نے 1997 میں یہی تقریریں نواز شریف صاحب کے خلاف بھی کی تھیں ۔ انہیں بھی یہودی ایجنٹ اور قادیانی نواز کہا تھا ۔ پھر مارشل لاء کی راہ ہموار ہوئی تو مولانا صاحب کو تحفے میں دو صوبوں میں حکمرانی اور مرکز میں فرینڈلی اپوزیشن کا قائد حزب اختلاف بنایا گیا ۔

مولانا سے مارشل لا ء لگوانے کی تیاری کروائی جا رہی ہے تاکہ نتیجے میں وہ کچھ حاصل کر سکیں ۔یہ کھیل یکطرفہ نہیں کیونکہ مولانا صاحب مکمل “یقین دہانی “ کے ساتھ ہی کام کرتے ہیں لیکن کچھ عرصے سے یقین دانیاں ادھر سے اُدھر ہو جاتی ہیں ۔

نوٹ : یہ بات عقل سے تعلق رکھتی ہے اور میرا تجزیہ ہے ۔ اس لیے فرقہ پرست مولوی لوگ نہ پڑھیں ۔

سبوخ سید

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here