زنٌاٹے دار تھٌپڑ کی گُونج: عمران خان کو چاہیے کہ ایسے فضول ، بے لگام سرمست وزیروں کو کابینہ سے نکالیں۔ کیایہ حکومت کے لئے بوجھ ہیں؟

0
740
Chaudhry Fawad Hussain, Federal Minister for Information and Broadcasting briefing media persons about the decisions taken in the Federal Cabinet Meeting in Islamabad on February 07, 2019

سمیع ابراہیم کو جوابا فواد چودھری کو زوردار تھپڑ رسید کرنا چاہیے تھا یا اگر ممکن ہوتا تو دو چار ایسے گھونسے مارتے کہ بدبخت وزیر کا چہرہ سوج کر آنکھیں مزید چھوٹی ہوجاتیں۔
اس میں کوئی شک نہیں کہ عمران خان کو ایسے ہی لوگ ڈبوئیں گے۔ پہلے وزیراطلاعات بن کر میڈیا سے جنگ کرائی، خواہ مخواہ کی مشکلات حکومت کے لئے پیدا کیں۔ وزیرسائنس بن کر غیر ضروری طور پر روئیت ہلال کمیٹی سے پنگے لئے، مفتی منیب الرحمن کے خلاف زہریلی مہم چلائی اور اپنے مختلف احمقانہ بیانات سے مذہبی طبقات کو برہم کیا ۔ وزیراعظم کو اتنی توفیق نہ ہوئی کہ اپنے وزیرکو شٹ اپ کال دے کہ اپنے کام سے کام رکھے اور خواہ مخواہ کے مسائل پیدا نہ کرے۔ 

پہلے سے ہنگامے کم تھے کہ شادی کی تقریب میں جا کر سیدھا اینکر پر حملہ کر دیا۔ اپنے بیان میں اس کا دفاع بھی کر رہا ہے اور خوشی خوشی اعتراف جرم بھی کر رہا۔ اگر ملک میں قوانین موجود ہیں تو اس پر اسے سزا ملنی چاہیے۔ 

سمیع ابراہیم ایک صحافی، اینکر ہیں، ان کی بہت سی آرا سے مجھے سخت اختلاف ہے، مگر یہ کیا طریقہ ہے انہیں ہدف بنانے یا کائونٹر کرنے کا؟ یہ ایک اینکر تھا، مگر ایسے بے لگام بدمعاش قسم کے وزیروں کو نہ روکا گیا تو اگلا ہدف کوئی بھی ہوسکتا ہے، کوئی عالم دین، سیاسی لیڈر، مخالف پارٹی کا رکن اسمبلی، سیاسی کارکن ، کوئی بھی ہوسکتا ہے ۔ سمیع ابراہیم کو تھپڑ پر خوش ہونے والے یاد رکھیں کہ یہ وقت کسی پر بھی آ سکتا ہے۔

فواد چودھری کے اس شرمناک اقدام کی کھل کر مذمت کرنی چاہیے۔ عمران خان کو چاہیے کہ ایسے فضول ، بے لگام سرمست وزیروں کو کابینہ سے نکالیں۔ یہ حکومت کے لئے بوجھ ہیں۔

Courtesy: Aamir Hashim Khakwani

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here