ہم نیوز کی مارننگ شو ہوسٹ اب سماء نیوز پر آٹھ بجے کا پرائم ٹائم شو کرینگی، کیا کامیاب ہو پائینگی؟

0
363

عنبر رحیم شمسی پاکستانی صحافت میں ایک اُبھرتا نام، ہم نیوز پر مارننگ شو سے اب وہ آٹھ بجے کا پرائم ٹائم شو کرینگی، بلا شُبہ یہ شو کرنا عنبر رحیم کیلیے کسی چیلنج سے کم نہیں ہے، اُنکو جیو نیوز سے حامد میر، اے آر وائی سے کاشف عباسی، دُنیا سے کامران شاہد اور ہم نیوز سے ندیم ملک کیطرف سے سخت مُقابلہ دیکھنے کو ملیگا۔ کیونکہ تمام تجربہ کار اور آٹھ بجے کے ٹائم بینڈ کے منجھے ہوئے اینکرز ہیں، تقریباً تمام سیاسی پارٹیوں کے سربراہان سے ڈائریکٹ انٹرویوز بھی کر چُکے، اور سیاسی پارٹیوں کی اے کلاس لیڈرشپ سے بھی ڈائریکٹ رابطے میں رہتے ہیں۔ عنبر شمسی کیلیے یقیننا یہ ایک مُشکل ٹاسک ہو گا کے وہ اے کلاس لیڈرشپ کو اپنے پروگرام میں بُلا سکیں۔ لیکن یہیں سے اُنکے کیریئر کی کامیاب شُروعات ہو سکتی ہے۔ عنبر شمسی ہم نیوز سے پہلے ڈان نیوز اور بی بی سی اُردو سے بھی وابستہ رہ چُکی ہیں، اُنکی پاکستانی اور انٹرنیشنل سیاست پر گہری نظر رکھتی ہیں۔

ڈان نیوز پر اُنکا پروگرام “نیوز وائز” رات سات سے آٹھ بجے آن ایئر ہوتا تھا، لیکن سات سے آٹھ بجے کے ٹائم فریم میں وہ کوئی بڑی ریٹنگز ناں لے سکیں، کیونکہ سات سے آٹھ بجے اے آر وائی، جیو، ایکسپریس، اور دُنیا نیوز پر تین سے چار ٹاپ رینکنگ کے اینکرز کی موجودگی میں جگہ بنانا اور ریٹنگز لینا بُہت مُشکل کام تھا

شفا یوسفزئی اور عنبر رحیم شمسی نے ہم نیوز سے “صُبح سے آگے” شُروع کیا، بلاشُبہ یہ ایک خوشگوار اضافہ تھا، لیکن یہ پروگرام بھی دُوسرے مارننگ شوز کو ٹف ٹائم ناں دے سکا۔ اور اسکا آغاز بھی ایک ایسے وقت پر ہوا جب مارننگ شوز پاکستان میں زوال پزیر ہیں۔

الیکٹرانک میڈیا سے پہلے عنبر پرنٹ میڈیا سے بھی مُنسلک رہیں اور ہیرالڈ اور ٹی این ایس کیلیے اپنی صحافتی ذمہ داریاں ادا کیں۔

اب وہ سماء نیوز سے “سوال عنبر شمسی کے ساتھ” پیر سے جُمعرات تک رات آٹھ بجے کیا کرینگی۔
میڈیا بائیٹس مس عنبر رحیم شمسی کو اُنکی اس نئی اسائینمینٹ پر مُبارکباد پیش کرتے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here