بے حسی سی بے حسی، ممُتاز شاعرہ فہمیدہ ریاض کے جنازے میں صرف تین ادیب و شاعر شریک ہوئے

0
220

رات فہمیدہ ریاض لاہور میں وفات پا گئیں ۔
آج لاہور عسکری1 میں 4 بجے اُس کا جنازہ تھا ۔ 
جنازے میں کُل ادیبوں اور شاعروں کی تعداد 3 تھی
ایک مَیں خود
دوسرے امجد اسلام امجد
اور تیسرے تحسین فراقی صاحب
باقی چالیس یا پچاس لوگ وہاں کی مسجد کے نمازی تھے ۔

خدا کی قسم لاہور کے ادیبوں اور شاعرں کی 99 فیصد تعداد منافق اور احساسِ کمتری میں مبتلا ہے اور یہ کامریڈ برادری تو فکری طور پر مفلس اور بانجھ ہے ہی ، نفسیاتی اور دلی طور پر بھی جہنمی ہے۔
ایک بھی آدمی وہاں پُرسے کو یا دفنانے کو موجود نہیں تھا ۔
کم از کم اسلام آباد کے ادیب شاعر لاہورکے شاعروں سے کہیں زیادہ اہلِ ظرف ، غیرت مند ، باوقار، وضع دار اور وفادار ہیں کہ وہاں کسی جنازے پر اِس قدر مفلسی نظر نہیں آتی ، چاہے ادیب کسی بھی پائے کا ہو اور یہ تو پھر فہمیدہ ریاض تھی

اللہ اکبر

یا اللہ مجھے لاہور میں موت نہ دینا ۔

علی اکبر ناطق

 

Writer: Ali Akbar Natiq

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here