چیئرمین بدلنے سے کُچھ نہیں ہو گا خان صاحب، پی سی بی مائینڈ سیٹ بدلنا ہو گا؟

0
377

پاکستان کی ایشیا کپ میں بد ترین شکست ورلڈ کپ سے پہلے ٹیم کی تیاریوں کو ایکسپوز کر گئی
اچھا ہوا کے پاکستان کے کھلاڑی جو پاپولیریٹی کے ساتویں آسمان پر تھے اب اُن کے پاؤں زمین پر لگیں ہیں۔ ورنہ ہمارے میڈیا نے اُنھیں سُپر ہیرو بنائے رکھنا تھا اور پے درپے شکستیں  ہمارا مُقدر بن جاتیں۔
بھلا ہو افغانستان ٹیم کا جس نے ہمیں آخری اوور تک قابو میں رکھا ورنہ افغانستان سے شکست بھی تاریخ میں لکھی جا چُکی ہوتی۔

ورلڈ کپ سے پہلے انڈیا اس مُشکل میں ہے کے وہ کھلاڑیوں کے پُول سے کن کھلاڑیوں کو باہر بٹھائے کیونکہ ہر دوسرا کھلاڑی زبردست پرفارمنس دے رہا اور ہمیں سمجھ نہیں آ رہی کے ہم کن کھلاڑیوں کو ٹیم میں کھلائیں؟ کیونکہ ایک سے بڑھ کر ایک نہلا ہمارے پاس دستیاب ہے۔

پی سی بی میں ابھی بھی وہی لوگ کام کر رہے ہیں جو نجم سیٹھی کے دور میں تھی تو تبدیلی کہاں آئی؟

سرفراز احمد کی کپتانی پر بات نہیں ہو گی ورنہ میڈیا کا ایک مخصوص گروپ آپکو زندہ نہیں چھوڑیگا، یہ گروپ اتنا مضبوط کے پی سی بی بھی ان سے پوچھے بغیر نہیں چل سکتا۔

اگر ورلڈ کپ جیتنا ہے تو سخت اور بڑے فیصلے کرنے ہونگے

کوچ  کو فرق سمجھنا ہو گا کے ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے کرکٹ میں کیا فرق ہے؟ کون سا کھلاڑی کونسے فارمیٹ کیلیے زیادہ ضروری ہے؟
تین وکٹیں گرنے کیبعد میچ کو ٹیل اینڈرز پر نہیں چھوڑا جا سکتا۔ یہ میڈیا کو لاھور اور کراچی کی لڑائی سے باہر نکلنا ہو گا۔

پی سی بی کو ایک مضبوط چیئرمین کی ضرورت ہے ناں کے بس جیسے ہے جہاں ہے کی بُنیاد پر بورڈ کو چلایا جائے

انضمام الحق بیشک ایک عظیم بیٹسمین تھے لیکن ابھی تک وہ ایک کامیاب سلیکٹر ثابت نہیں ہو سکے۔

ورلڈ کپ ٹیم کے لیے اُنکی تیاریاں زیرو ہیں، ابھی تک ایسا وننگ کمبینیشن نہیں بنا سکے جو ورلڈ کپ میں ٹیم کو لیڈ کر سکے۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کی پرفارمنس میں تسلسل نہیں ہے، ایک جیت کیبعد ریلیکس ہو جاتے ہیں اور پھر بڑے مُقابلے میں ٹیم کی کمزوریاں کُھل کر سامنے آ جاتی ہیں۔

سابقہ کپتان اظہر علی کہاں ہیں؟

محمد حفیظ کہاں ہیں؟

فواد عالم کہاں ہیں؟

اسد شفیق کہاں ہے؟

کوچ کی سخت مُخالفت کے باوجود ٹیم میں جگہ بنانے والے جُنید خان چار وکٹیں لے اُڑے، اس کا جواب کون دیگا؟
وہ کونسے عناصر ہیں جو جُنید کو ٹیم سے باہر رکھنا چاہتے تھے

نئے چیئر مین کرکٹ بورڈ احسان مانی کو آگے بڑھ کر لیڈ کرنا ہو گا۔ ورنہ ورلڈ کپ میں پاکستان کی پرفارمنس ایشیا کپ سے مُختلف نہیں ہو گی۔

Blog by : Imran Malik

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here