سابقہ وزراء کو سرکاری لگژری گاڑیاں واپس کرنیکاعدالتی حُکم: آپ کیا کہتے ہیں؟

0
83

سُپریم کورٹ نے حُکم دیا ھے کے سابقہ وزیر اعظم، اور سابقہ وزرا فورا سے پہلے سرکاری گاڑیاں واپس کریں۔
خادم اعلی پنجاب اور رانا ثنااللہ کے پاس بھی جو سرکاری اضافی گاڑیاں ہیں وہ فورا واپس کی جائیں۔
جمعرات کو سُپریم کورٹ کے نوٹس کے بعد ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے حکومتی وزراء اور اداروں کے سربراہوں کے پاس گاڑیوں کی تفصیلات دیں۔

رپورٹ کیمطابق 105 گاڑیاں واپس کرنی ہونگی

جسمیں بُلٹ پروف لینڈ کروزر اور تین ڈبل کیبن گاڑیاں مولانا فضل الرحمن کے استعمال میں ہیں۔

عابد شیر علی اور کامران مائیکل کے پاس سرکاری مرسڈیز بینر ہیں

اشتراوصاف کے پاس بھی لگژری بُلٹ پروف گاڑی میرٹ کے برعکس ھے

قانونی طور پر وزیر 1800 سی سی سے بڑی گاڑی رکھنے کا استحقاق نہیں رکھتا، تو پھر عوامی ٹیکس منی سے وزرا کو پُر تعیش گاڑیاں کیوں دی گئیں؟

چیف جسٹس سُپریم کورٹ نے کہا کے میرٹ کے بغیر وزرا کو گاڑیاں کیوں دی گئیں؟ اُنھوں نے مزید کہا کے نیب کو بھی اسکا نوٹس لینا چاہیے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here